Saturday, May 07, 2005

ماں کے نام

عبادتوں میں، سجدوں میں، رسموں اور تیوہاروں میں پتہ نہیں لوگ کس سے کیا مانگتے ہیں ـ اگر عبادت کرنا اتنا ہی ضروری ہے تو کیوں نہ اپنی ماں کی عبادت کروں جو میری خوشیوں کیلئے اپنے آپ کو قربان کرسکتی ہے، میری پریشانیوں کو اپنے سر پر اٹھاتی ہے، میرے دکھ کو اپنا دکھ سمجھتی ہے، میرے درد کو دیکھ کر بلبلا اٹھتی ہے، مجھے بھوکا پیاسا دیکھ کر بیقرار ہوجاتی ہے، میرے آرام کیلئے اپنی نیند حرام کرلیتی ہے، میری بیماری میں ساتھ رہتی ہے، اگر تکلیف میں ہوں تو میری مدد کو پہنچ جاتی ہے ـ دنیا کی ہر ماں ایسی ہی ہوتی ہے جو اپنی اولاد کی خوشیوں کیلئے اپنا سب کچھ قربان کرسکتی ہے ـ کیونکر خواہ مخواہ ایسے رب کی عبادت کروں جس کے وجود کو میں جانتا تک نہیں ـ کون ہے اس دنیا میں جو میرے دل کی بات سمجھ سکے؟ اگر کوئی ہے تو وہ صرف ماں ہے ـ
Blogger شعیب صفدر said...

good post

May 10, 2005 6:19 PM  
Anonymous shuaib's day said...

Thank you Dear Safaddar

May 10, 2005 10:53 PM  

Post a Comment

ہندوستان سے پہلا اُردو بلاگ
First Urdu Blog from India

IndiBlogger - The Largest Indian Blogger Community

حالیہ تحریریں

’عرب اتحاد‘
منفرد بلاگ
لکّی نمبر
Apple
بڑا میٹرکس
پچھلے مہینے
مسلم ملک
ستاروں سے پیچھے
ہاں جی!
گوگل کا بلاگر

Hindi Blog

Urdu Graphic Blog

Motion Blog

Powered by ShoutJax

Counters