Tuesday, January 24, 2006

ہندوستان میں سعودی شاہ کی آمد

ایسا پہلی بار ہو رہا ہے کہ 51 سالوں میں کسی سعودی شاہ کو دنیا کے سب سے بڑے سیکولر اور جمہوری ملک ہندوستان آنا نصیب ہوا ـ خادم الحرمین الشریفن اور سعودی عرب کے موجودہ ولی عہد شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز دورہ ہند کیلئے نکل پڑے ہیں اور رات کے کسی بھی پہر ہندوستان میں نظر آسکتے ہیں ـ وہ یہاں اپنے قیام کے دوران صدر جمہوریہ جناب عبدالکلام اور وزیراعظم مسٹر منموہن سنگھ سے ملاقات کا شرف حاصل کریں گے ساتھ ہی اپنے پسندیدہ موضوعات جیسے دہشت گردی، توانائی اور دفاع کو ہندوستانی رہنماؤں کے ساتھ شیئر کریں گے ـ علاوہ ازیں یہاں کے فلاحی و سماجی اداروں کے سربراہان سے ملکر چندے و عطیہ جات کے لین دین پر بھی غور فرمائیں گے اِس موقع پر دینی مدارس والوں کو سعودی شاہ کے اِرد گِرد پنکھ مارنے کی بھی گنجائش نہیں ہوگی کیونکہ وہ سخت سیکوریٹی میں ہونگے ـ دوسری طرف ائمہ اور علماؤں نے شاہ سعودی عربیہ کی آمد کا خیر مقدم کیا ہے اور امید ظاہر کی ہے کہ دہشت گردی کے لگے دھبّوں کو ساتھ ملکر دھونے میں آسانی ہوگی ـ یہ وہی شاہ ہیں جو سعودی عرب کے ولی عہد بننے کے بعد مجاہدین کو للکارتے ہوئے امریکہ کی قربت حاصل کی، فی الحال وہ ایک امریکی سپاہی کیطرح مجاہدوں کو پکڑ کر امریکہ کے حوالے کر رہے ہیں ـ میڈیا والوں نے خیال ظاہر کیا یہاں پہنچ کر شاہ عبداللہ ہندوستانی مسلمانوں کے کسی خاص فرقے سے ملکر عراق، افغانستان اور فلسطین جیسے پیچیدہ مسائل پر جذباتی انداز سے گفتگو کرسکتے ہیں مگر ایران اور شام کے تازہ ترین حالات پر روشنی ڈالنے کیلئے اُنکے پاس شاید وقت نہیں ہوگا ـ شاہِ سعودی عرب چار دن تک ہندوستان کے سرکاری مہمان ہونگے، امید ہے وہ اپنی پہلی فرصت میں تاج محل جانا پسند فرمائیں گے تاکہ وہاں جاکر روایتی بِدعات کی رسم سے فیضیاب ہوسکیں ـ ہندوستان ہمیشہ سے بیت المقدس اور فلسطین کے بارے میں فکر مند رہتا ہے اور اِس موقع پر بھی سعودی ولی عہد سے کہنا چاہے گا کہ بین الاقوامی برادری سے باہمی گفت و شنید کا سلسلہ جاری رہے ـ مملکتہ السعودیہ جو کثرت سے تیل پیدا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے اور ہندوستان اِس ملک سے کثیر مقدار میں تیل خریدتا آرہا ہے، امید ہے سعودی شاہ سے ملاقات دونوں ملکوں کے بیچ تیل کی سودے بازی میں مزید آسانیاں ہونگی ساتھ ہی دوہرے ٹیکس کو ٹالنے اور دو طرفہ سرمایہ کاری کو فروغ دینے سے متعلق سمجھوتوں پر دستخط بھی ہونگے اور پھر کبھی شام کو فرصت ملے تو چائے پینے کے بعد دہشت گردی کا موضوع بھی چھیڑیں گے ـ
Blogger iabhopal said...

خادِم الحرمَین شریفَین کو پاکستان اور ہندوستان کا فرق معلوم ہو جائے گا مگر مجھے تو پتہ نہیں چلے گا ۔ اِس لئے آپ سے مدد کی درخواست ہے ۔ مذہب کو بھول جائیے پھر بتائیے کہ پاکستان اور ہندوستان کے عوام اور حکمرانوں میں کیا فرق ہے جس کے باعث پاکستان پیچھے رہ گیا اور ہندوستان بہت آگے نکل گیا ؟

January 26, 2006 2:07 PM  
Anonymous Nida said...

The main difference is the way government runs by people (democracy)not by Army. This is true for Bangladesh too. We should learn a lesson that by creating new states suffering prolongs not wiped out. Let us all hope for a safe and open border sub continent and we stop lying to our kids about the history of our nations.

Mr. Shuaib, I am a Pakistani living in the US for a while. Just out of curiosity I like to know the situation of minorities (Muslims) in your area irrespective to employment and education. Last I heard that it is not so good and is it self inflicted or the system still going against them.

Thanks for sharing stuff about India with us. It's my heritage and I love everything about it.

January 27, 2006 4:36 AM  
Anonymous Bushra said...

Can one learn Urdu in Indian schools as I thought Hindi is India's national language.

January 28, 2006 1:01 PM  

Post a Comment

ہندوستان سے پہلا اُردو بلاگ
First Urdu Blog from India

IndiBlogger - The Largest Indian Blogger Community

حالیہ تحریریں

کورل فیملی
اِن سے ملو ـ 9
عالمی اردو کانفرنس
اضافہ (اِن سے ملو ـ 8)
لڑکیاں لڑکوں جیسی نہیں؟
Back to دبئی
بنگلور
اِن سے ملو ـ 8
میرے شہر سے مختصرات
میرا بھارت مہان

Hindi Blog

Urdu Graphic Blog

Motion Blog

Powered by ShoutJax

Counters