Tuesday, March 14, 2006

چھٹی پر

ابھی دو ماہ پہلے مہینہ بھر چھٹی کرنے بعد ایک بار پھر اپنے گھر والوں سے ملنے اپنے شہر بنگلور جا رہا ہوں ـ والدین کا اصرار ہے کہ بڑی بہن کی شادی اٹینڈ نہ کرسکا تو چھوٹی بہن کی شادی میں میرا ہونا بہت ضروری ہے ورنہ سب ناراض ہوجائیں گے ـ والدین کی ناراضگی میری زندگی کیلئے بہت بڑی مصیبت بن سکتی ہے، صرف اُنکی خوشنودی حاصل کرنے میرا جانا ضروری ہے ـ پہلے اپنے منیجر کو منایا وہ نہ مانا کہ ابھی تو ایک مہینہ چھٹی مناکر آیا ہے اور یہاں کام بھی بہت زیادہ ہے ـ ڈائریکٹ کمپنی مالک کے کیبن میں گُھسا، کچھ دیر تک منّت سماجت کرنے کے بعد بالآخر پندرہ دن کی چھٹی دینے پر مالک رضا مند ہوگیا ـ نان اسٹاپ نہ ملا سمّر شروع ہوچکا اور اسکول کی چھٹیاں بھی، یہاں ہندوستانی اتنے ہیں کہ باقی لوگ چار پانچ دکھائی دیتے ہیں ـ یہاں موجود انڈین اسکولوں کے بچے بچیاں اپنے نانا نانی کے گھر چھٹیاں منانے سب ایک ماہ پہلے ہی ٹکٹیں بک کروا چکے، آئندہ پندرہ دنوں تک بنگلور کیلئے سبھی ایئر لائنز بک ہیں اور ممبئی کیلئے تو سبھی فلائٹس فُل ـ ہمارے ایک ایجنٹ دوست کی مدد سے بالآخر Air Arabia میں ممبئی تک کا ٹکٹ ملا، اور یہیں سے انٹرنیٹ پر ممبئی سے بنگلور جانے کیلئے کنگ فِشر ایئر لائنز میں سیٹ بک کروا لیا ـ اچھا تھا اگر ایک ماہ پہلے ہی بنگلور کیلئے ٹکٹ بک کر دیتا، اب افسوس کرنے سے کیا فائدہ صرف والدین کو خوش کرنے کیلئے جانا ہے کہ آپ نے بلایا اور میں آگیا ـ
خدا سے تیرہ بار ملو
Blogger iabhopal said...

جِس نے والدین کو خُوش کیا وہ سدا خوُش رہا

March 15, 2006 11:31 AM  

Post a Comment

ہندوستان سے پہلا اُردو بلاگ
First Urdu Blog from India

IndiBlogger - The Largest Indian Blogger Community

حالیہ تحریریں

سشمتا سین
بش طواف نہ کرسکے!
پولینڈ میں بالی ووڈ
اِن سے ملو - 13
اِن سے ملو - 12
اور یہ شارجہ
ہممم ـــ سبق آموز ہے!
بے موسم بارش
دبئی سے نمستے
America, the host of Lord

Hindi Blog

Urdu Graphic Blog

Motion Blog

Powered by ShoutJax

Counters